Saturday, July 20, 2024
ہومپاکستانبھارت نے کشمیری خواتین کے قتل کو ریاستی ہتھیار بنا رکھا ہے،ترجمان دفترخارجہ

بھارت نے کشمیری خواتین کے قتل کو ریاستی ہتھیار بنا رکھا ہے،ترجمان دفترخارجہ

اسلام آباد،پاکستان نے عالمی برادری سے مقبوضہ کشمیر میں خواتین کیخلاف بھارتی تشدد اور عصمت دری رکوانے کیلئے کردار ادا کرنے کا مطالبہ دہرایا ہے۔ترجمان دفتر خارجہ کے مطابق بھارت نے مقبوضہ کشمیر میں کشمیری خواتین کے قتل کو ریاستی ہتھیار بنا رکھا ہے۔ترجمان دفترخارجہ نے کہا کہ آج ہم کشمیری خواتین کی کنن اور پوش پورا گاوں میں 23فروری 1991میں اجتماعی عصمت دری کے ہولناک واقعہ کو یاد کر رہے ہیں، یہ دن مقبوضہ کشمیر میں بین الاقوامی برادری کی اجتماعی یاد پر ایک داغ ہے، اس واقعہ میں ملوث مجرموں کا احتساب کیا گیا اور نہ متاثرین کو انصاف فراہم کیا گیا۔دفتر خارجہ کے مطابق بھارت مقبوضہ کشمیر میں جان بوجھ کر قانون کی حکمرانی اور انسانی حقوق کی خلاف ورزیاں کر رہا ہے، بھارت کے 5اگست2019 کے یکطرفہ اقدامات کے بعد ان گھناونے جرائم میں مزید اضافہ ہوگیا ۔ترجمان دفترخارجہ نے مزید کہا کہ مقبوضہ کشمیر میں تشدد، پڑے پیمانے پر عصمت دری کے واقعات کو خود مختار کمیشنز، انسانی حقوق کی تنظیموں، عالمی میڈیا اور سول سوسائٹی نے بھی دستاویزی شکل دی ہے۔

روزانہ مستند اور خصوصی خبریں حاصل کرنے کے لیے ڈیلی سب نیوز "آفیشل واٹس ایپ چینل" کو فالو کریں۔