Saturday, July 20, 2024
ہومپاکستاناین آر او کی دیر ہے، اپوزیشن کہے گی عمران خان زبردست آدمی ہے، وزیراعظم

این آر او کی دیر ہے، اپوزیشن کہے گی عمران خان زبردست آدمی ہے، وزیراعظم

کوٹلی، وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ اپوزیشن کوآج این آراودیدوں تو یہ کہیں گے ،عمران خان سے زبردست آدمی کوئی نہیں جس نے کشمیر کی بات کی ہے۔

وزیراعظم عمران خان نے کوٹلی میں نجی ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ کوئی بھی آج تک آبادی کے خلاف نہیں جیت سکا، تاریخ اٹھاکردیکھ لیں جب قوم آزادی کا فیصلہ کرلے تو کوئی انہیں زیادہ دیر غلام نہیں بناکر رکھ سکتا، مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوج نہ ہو تو آزاد ہوچکا ہوتا، مودی نے5اگست کوکشمیریوں کودبانیکی کوشش کی مگروہ آزادی کے لیے کھڑے ہیں، کشمیری قوم 5 اگست کے بعدآزادی کیلئے اوربھی پرعزم ہوگئی ہے، مقبوضہ کشمیرکامعاملہ اقوام متحدہ اوردنیامیں اٹھ گیاہے۔وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ بھارت نیفیٹف میں پاکستان کودبانیکی کوشش کی مگروہ ناکام رہا، ہماری خارجہ پالیسی کی بدولت دنیامیں پاکستان کی مقبولیت پہلے سے کہیں زیادہ ہے، دنیامیں یہ شعورپیداہوگیاہے کہ کشمیرمیں ظلم وستم ہورہاہے، 50سال میں آج تک سلامتی کونسل میں3مرتبہ کشمیرپربات نہیں ہوئی لیکن ہمارے دور میں ہوئی، اس کا مطلب ہے کہ معاملہ عالمی سطح پراٹھ گیا، حالات جس طرف جارہے ہیں ہندوستان کیلئے مشکل ہوگا، ہم نے ہندوستان سے پھرکہاہے کہ ہمارے ساتھ بات چیت کریں، بھارت آرٹیکل370 بحال کرکے بات کرے،ہم تیارہیں، بات چیت کے علاوہ بھارت کے پاس آگے جانیکاراستہ نہیں۔عمران خان نے کہا کہ اپوزیشن کوآج این آراودیدوں یہ کہیں گے عمران خان سے زبردست آدمی کوئی نہیں جس نے کشمیر پر بات کی، یہ لانگ مارچ بھی کرلیں،انہیں جومرضی کرناہے کرلیں، لوگ چوروں کیلئے سڑکوں پرنہیں نکلتے، دیگر ممالک میں لوگ حکومتی کرپشن کیخلاف سڑکوں پرنکلے ہیں، آج تک کبھی کوئی کرپشن بچانے کیلئے بھی نکلاہے؟۔وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ نواز شریف خوددم دباکربچوں کیساتھ باہربیٹھاہواہے،بھائی کے بچے بھی باہرہیں، ان کامنشی بھی اپنے بچوں کیساتھ باہر بیٹھا ہواہے، وہ باہرکیوں بیٹھے ہیں؟انہیں پتہ ہے، یہ لوگوں کوبیوقوف سمجھتے ہیں، جولوگوں کوبیوقوف سمجھتے ہیں اس سے بڑابیوقوف کوئی نہیں، باہر بیٹھے لوگوں کوواپس لانیکی پوری کوشش کرینگے، اس میں شاید دیر لگے گی لیکن کوشش پوری کریں گے۔عمران خان نے مزید کہا کہ اپوزیشن اورمیڈیامیں بیٹھے لوگ کہتے ہیں کہ حالات اچھے نہیں، ہم سب کہتے ہیں حالات اچھے نہیں،ہمیں مقروض ملک ملا، ان لوگوں نے 10 سالوں میں ملک پر4گناقرض چڑھادیا، انشااللہ ہم حالات کوٹھیک کرنیکی کوشش کرینگے۔ وزیراعظم نے براڈ شیٹ انکوائری کمیشن کے سربراہ جسٹس عظمت سعید پر اپوزیشن اعتراض سے متعلق سوال کے جواب میں کہا کہ ان لوگوں نے اپنے ججزاورنیب کے ہیڈز رکھے ہوئے تھے، انہیں اپناجج اورنیب کاہیڈنہیں ملے گاتویہ نہیں مانیں گے۔

روزانہ مستند اور خصوصی خبریں حاصل کرنے کے لیے ڈیلی سب نیوز "آفیشل واٹس ایپ چینل" کو فالو کریں۔