Tuesday, May 28, 2024
ہومبریکنگ نیوزلاہور ہائیکورٹ: توشہ خانہ کا 1990 سے 2001 تک کا ریکارڈ پبلک کرنے کا حکم

لاہور ہائیکورٹ: توشہ خانہ کا 1990 سے 2001 تک کا ریکارڈ پبلک کرنے کا حکم

لاہور: لاہور ہائیکورٹ نے توشہ خانہ کا 1990 سے لے کر 2001 تک کا ریکارڈ پبلک کرنے کا حکم دے دیا۔ قیام پاکستان سے اب تک توشہ خانہ سے لیے گئے تحائف کی تفصیلات فراہم کرنے کی درخواست کی سماعت لاہور ہائیکورٹ کے جسٹس عاصم حفیظ نے کی۔

دوران سماعت عدالت نے توشہ خانہ کا 1990 سے 2001 تک کا ریکارڈ پبلک کرنے کا حکم دیتے ہوئے کہا ہے کہ کوئی چیز چھپائی نہیں جاسکتی، جس دوست ملک نے تحائف دیے وہ بھی بتایا جائے۔ وفاقی حکومت کی جانب سے تحائف کے ذرائع بتانے کی ہدایت پر اعتراض کیا گیا، وکیل وفاقی حکومت کا کہنا تھا کہ ہم نے اس کے خلاف اپیل فائل کرنی ہے جس پر فاضل جج نے کہا کہ اپیل آپ کا حق ہے، بغیر ادائیگی کے کوئی تحفہ نہیں رکھا جا سکتا۔

ایک روز قبل کی سماعت میں وفاقی حکومت کے وکیل نے عدالت سے کہا تھا کہ توشہ خانہ کا سال 2000 سے پہلے کا ریکارڈ منظم شکل میں موجود نہیں ہے۔ خیال رہے کہ گزشتہ دنوں وفاقی حکومت کی جانب سے توشہ خانہ کا 2002 سے 2023 تک کا ریکارڈ پبلک کیا گیا تھا۔

روزانہ مستند اور خصوصی خبریں حاصل کرنے کے لیے ڈیلی سب نیوز "آفیشل واٹس ایپ چینل" کو فالو کریں۔