Friday, March 1, 2024
ہومکامرسسی پیک پاکستانی تکنیکی ماہرین کے لئے ایک سنہری موقع

سی پیک پاکستانی تکنیکی ماہرین کے لئے ایک سنہری موقع

اسلام آباد (نیوزڈیسک) چین پاکستان اقتصادی راہداری پاکستانی تکنیکی ماہرین کے لیے مواقع کو بڑھا رہی ہے۔پاکستان کے تربیلا علاقے میں، ایک مقامی ٹیکنیشن عمیر زیب کی زندگی چین پاکستان اقتصادی راہداری (سی پیک) منصوبے کے آغاز کے بعد سے نمایاں طور پر بدل گئی ہے۔ سی پیک ، چین اور پاکستان کے درمیان تعاون، چائنا پاور کنسٹرکشن کارپوریشن کو تبیلا ڈیم کی توسیع اور تزئین و آرائش کے لیے لایا، جس سے مقامی کمیونٹی کے لیے روزگار کے قیمتی مواقع پیدا ہوئے۔جمعہ کے روز چینی میڈ یا کی ایک رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ 
تجسس اور نئی ٹیکنالوجیز میں گہری دلچسپی کے باعث عمر زیب نے اس پروجیکٹ میں شمولیت اختیار کی۔ سائٹ پر اس کے تجربے، جس میں چینی پیشہ ور افراد کے ساتھ وسیع تکنیکی تبادلے اور تربیت کا نشان ہے، نے اسے جدید پروڈکشن ٹیکنالوجیز سیکھنے کی اجازت دی۔ اس کی فطری قابلیت اور لگن نے اسے جلد ہی پروجیکٹ کی تکنیکی ٹیم میں ایک اہم مقام پر پہنچا دیا۔ پیچیدہ مسائل کو حل کرنے کی ان کی قابلیت نے انہیں چین اور پاکستان دونوں سے اپنے ساتھیوں میں وسیع احترام حاصل کیا۔
عمر زیب کی پیشہ ورانہ کامیابیوں نے انہیں نہ صرف ذاتی پہچان دلائی ہے بلکہ ان کے خاندان کی فلاح و بہبود میں بھی نمایاں بہتری لائی ہے۔ اہم روٹی کمانے والے کے طور پر، اس کی آمدنی نے نہ صرف خاندان کی مالی حالت کو مستحکم کیا ہے بلکہ اس نے اپنے بہن بھائیوں کی تعلیم اور شادی میں بھی مدد کی ہے۔2022 کے اختتام تک، سی پیک  منصوبے نے پاکستان میں 25.4 بلین ڈالر کی براہ راست سرمایہ کاری کی ہے اور تقریباً 236,000 ملازمتیں پیدا کی ہیں۔ اس اہم اقتصادی شراکت نے پاکستان کے سماجی و اقتصادی منظرنامے کو نمایاں طور پر تبدیل کر دیا ہے، جس سے مقامی آبادی کی زندگیوں پر گہرا اثر پڑا ہے۔