Tuesday, April 16, 2024
ہومپاکستانیوم پاکستان پر مسلح افواج کی شاندار پریڈ ،،سول ، فوجی قیادت ا و رغیر ملکی شخصیات کی شرکت

یوم پاکستان پر مسلح افواج کی شاندار پریڈ ،،سول ، فوجی قیادت ا و رغیر ملکی شخصیات کی شرکت

اسلام آباد،یوم پاکستان کے حوالے سے شکر پڑیاں گراونڈ اسلام آباد میں مسلح افواج کی مشترکہ پریڈ کی تقریب ہوئی، پریڈ کے مہمان خصوصی صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی تھے۔تقریب میں صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی، وزیر دفاع پرویز خٹک، چیئرمین جوائنٹ چیفس آف آرمی سٹاف کمیٹی جنرل ندیم رضا نشان امتیاز ملٹری، چیف آف آرمی سٹاف جنرل قمر جاوید باجوہ نشان امتیاز ملٹری، چیف آف نیول سٹاف ایڈمرل محمد امجد خان نیازی، وائس چیف آف ایئر سٹاف ایئر مارشل سید نعمان علی شریک ہوئے۔ وزیراعظم عمران خان قرنطینہ ہونے کے باعث تقریب میں شریک نہیں ہوئے۔پہلی بار قومی پرچم کو اکیس توپوں کی سلامی بھی دی گئی۔ پریڈ سے پہلے قومی ترانہ پڑھا گیا اور دھن بجائی گئی۔ مسلح افواج، رینجرز، پولیس اور خواتین کے دستے سبز ہلالی پرچم تھامے پریڈ میں شریک ہوئے۔بری، فضائیہ اور نیوی کے دستوں نے سلامی دی، بلوچ ریجمنٹ، لائٹ کمانڈوز بٹالین، پریذیڈنٹ باڈی گارڈ، ائیر پورٹ سیکورٹی فورس، جی ایچ کیو ملٹری بینڈ اور خواتین کا دستہ بھی پریڈ کا حصہ رہا۔اسلام آباد کی فضاں میں طیاروں کی گھن گرج سنائی دی، ایئر چیف نے معزز مہمانوں کو فضا سے سلامی دی۔ جے ایف تھنڈر سمیت مختلف طیاروں نے فلائی پاسٹ کا شاندار مظاہرہ کیا۔یوم پاکستان پریڈ میں ترکی کا ایف سولہ طیارہ خصوصی طور پر شامل ہوا، ترک پائلٹ نے شاندار کرتب دکھائے، طیاریسے پاک ترک دوستی اور دل دل پاکستان کانعرہ بھی لگایا۔ ترک ہوا باز نے سلامی کے چبوترے کے سامنے سے گزرتے ہوئے طیارے میں سے ہاتھ ہلا کر سلام بھی کیا۔پریڈ میں پیرا ٹروپرز نے بھی شاندار مہارت کا مظاہرہ کیا۔ سکائی ڈیورز نے دس ہزار فٹ کی بلندی سے چھلانگ لگائی۔ آرمی کے شہباز، نیوی کے سیگلز اور ائیر فورس کے شہپر اس فضائی مظاہرے کا حصہ تھے۔تمام فوجی جوان پیرا شوٹ پہن کر طیارے سے کودے اور کمال مہارت کے ساتھ لینڈ کیا۔ پاکستان آرمی کیساتھ فلسطین، ترکی، سری لنکا اور بحرین کے پیرا ٹروپرز نے بھی فن کا مظاہرہ کیا۔ پیرا ٹروپرز کے باعث فضا میں قوس قزاح کے رنگ بکھر گئے۔جوانوں نے زمین پر لینڈ نگ کے بعد قومی پرچم صدر مملکت کو پیش کیا اور بلند نعرے لگائے۔ صدر پاکستان نے بھی ڈائس سے اتر کر جوانوں سے ملاقات کی۔تقریب میں سول و فوجی قیادت اور غیر ملکی شخصیات نے بھی شرکت کی۔ پریڈ میں چاروں صوبوں، گلگت بلتستان اور آزاد کشمیر کے وفود بھی شریک ہوئے۔ جڑواں شہروں میں مقامی تعطیل تھی جبکہ موبائل فون سروس بھی بند رہی۔ موسم کی خرابی کے باعث 23 مارچ کو پریڈ نہیں ہوسکی تھی۔