Saturday, January 28, 2023
Google search engine
ہوماہم خبریںپاکستان نے ہنرمند افرادی قوت کے حوالے سے جنوبی کوریا کے ساتھ...

پاکستان نے ہنرمند افرادی قوت کے حوالے سے جنوبی کوریا کے ساتھ ایم او یو پر دستخط کر دیئے

اسلام آباد(شبیر حسین)وزارت برائے سمندر پار پاکستانیوں اور انسانی وسائل کی ترقی اور جمہوریہ کوریا کی وزارت روزگار و محنت (MOEL) نے ملازمت کے تحت کارکنوں کو بھیجنے اور وصول کرنے سے متعلق مفاہمت کی ایک یادداشت پر دستخط کیے ہیں۔ 2006 میں پرمٹ سسٹم (EPS)۔
ایم او یو کی ہر دو سال بعد تجدید کی جاتی ہے۔ اب تک، اوورسیز ایمپلائمنٹ کارپوریشن (ایم او پی ایچ آر ڈی کا ایک منسلک محکمہ)ای پی ایس کے تحت 10,000 سے زیادہ کارکنوں کو جمہوریہ کوریا روانہ کر چکا ہے، EPS کی تجدید پر دستخط کی تقریب گزشتہ روز وزارت برائے سمندر پار پاکستانی اور انسانی وسائل کی ترقی، اسلام آباد میں منعقد ہوئی۔
وفاقی وزیر سمندر پار پاکستانی اور انسانی وسائل کی ترقی ساجد حسین طوری نے حکومت پاکستان کی جانب سے مفاہمت کی یادداشت پر دستخط کیے۔
جمہوریہ کوریا کے سفیر H.E Suh Sangpyo نے جمہوریہ کوریا کی جانب سے وزیر محنت اور روزگار H.E Lee Jung Sik کی طرف سے ایم او یو کی دستخط شدہ کاپی پیش کی۔
وفاقی وزیر ساجد حسین طوری نے کہا کہ پاکستان اور کوریا کے تعلقات تمام شعبوں میں مضبوط سے مضبوط تر ہوتے جا رہے ہیں۔ پاکستان اور کوریا دیرینہ تعلقات سے لطف اندوز ہو رہے ہیں جو دہائیوں پرانی اقتصادی شراکت داری پر مبنی ہیں۔
وفاقی وزیر برائے او پی اینڈ ایچ آر ڈی کی درخواست پر کوریا کے سفیر نے یہ یقین دہانی بھی کرائی کہ کوریا آئندہ اپنے وزیر محنت و روزگار کے دورہ پاکستان کے دوران ایک الگ ایم او یو/ایگریمنٹ کے تحت پاکستان سے ہنر مند افرادی قوت اور آئی ٹی پروفیشنلز کی خدمات حاصل کرنے پر غور کرے گا۔
وزیر برائے او پی اینڈ ایچ آر ڈی نے موجودہ سال کے دوران پاکستان کا کوٹہ 1100 سے بڑھا کر 2400 کرنے کے لیے موجودہ کوریا کے سفیر کی کوششوں کو بھی سراہا جن میں سے 1600 ورکرز پہلے ہی کوریا جا چکے ہیں۔
دونوں فریقوں نے تعاون کو بڑھانے اور اسے تعمیرات، ماہی گیری اور زراعت جیسے دیگر شعبوں تک بڑھانے پر اتفاق کیا۔

مقالات ذات صلة

آپ کی رائے

من فضلك ادخل تعليقك
من فضلك ادخل اسمك هنا
This site is protected by reCAPTCHA and the Google Privacy Policy and Terms of Service apply.

- Advertisment -
Google search engine

اہم خبریں