Tuesday, May 28, 2024
ہومبریکنگ نیوزجنگل کے قانون سے ملک کا مستقبل خطرے میں ڈالا جا رہا ہے، عمران خان

جنگل کے قانون سے ملک کا مستقبل خطرے میں ڈالا جا رہا ہے، عمران خان

راولپنڈی(آئی پی ایس ) پی ٹی آئی کے بانی عمران خان نے کہا ہے کہ یہاں جنگل کا قانون ہے، بہاولنگر میں طاقتور نے پھینٹی بھی لگائی اور معافی بھی منگوائی۔ اڈیالہ جیل میں میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ گزشتہ سماعت پر جنگل کے بادشاہ کا نام لیا تھا تو عدالت میں اضافی شیشے اور دیواریں بنا دی گئی ہیں،

بہاول نگر میں قانون توڑ کر پولیس کو پھینٹی لگائی گئی بعدازاں وائسرائے نے کہا کہ یہ ہمارے بھائی ہیں، ایسا سلوک بھائیوں سے نہیں غلاموں سے کیا جاتا ہے انہوں نے کہا کہ طاقتور نے پھینٹی بھی لگائی اور معافی بھی منگوائی یہ سب جنگل کا بادشاہ کر رہا ہے اور ملک میں جنگل کا قانون ہے، جنگل کے قانون کے باعث ملک میں سرمایہ کاری نہیں آئے گی،

بادشاہ چاہتا ہے تو نواز شریف کے تمام کیسز معاف ہوجاتے ہیں اور جب بادشاہ چاہتا ہے تو پانچ دن میں ہمیں تین کیسز میں سزا دے دی جاتی ہے، ملک میں وہ قانون ہے جو جنگل کا بادشاہ چاہتا ہے اور بہاول نگر واقعہ سے یہ ثابت ہوگیا۔عمران خان نے کہا کہ ملک میں نہ آئین کی حکمرانی ہے، نہ قانون کی اور نہ جمہوریت کی، قرض لینے سے معیشت اور کرنسی مستحکم نہیں ہوسکتی، آئی ایم ایف کے قرض سے ملک میں مہنگائی کی لہر آئے گی، تنخواہ دار اور غریب آدمی مارا جائے گا،

سرمایہ کاری نہ آنے سے قرض اور غربت بڑھے گی، جنگل کے قانون سے ملک کا مستقبل خطرے میں ڈالا جا رہا ہے۔ان کا کہنا تھا کہ گزشتہ ڈیڑھ سال میں پاکستانیوں نے دبئی میں ریکارڈ سرمایہ کاری کی، بہاول نگر واقعہ بتاتا ہے کہ ملک کے حالات کیا ہیں۔سماعت کے اختتام پر عمران خان نے جج ناصر جاوید رانا سے کہا کہ میری بیوی کی طبعیت خراب ہے ڈاکٹر کی ہدایت کے مطابق اینڈوسکوپی ٹیسٹ نہیں کروایا جارہا، چھ سال سے میری بیوی بیمار نہیں ہوئی اور چار ہفتے سے بیمار ہے مگر مکمل طبی معائنہ نہیں ہو رہا،

میری بیوی کی صحت کا معاملہ سیریس ہے اس کے ٹیسٹ کروانے کا حکم دیا جائے ظاہری معاننہ سے کچھ معلوم نہیں ہو سکتا ٹیسٹ ہوں گے تو حقائق سامنے آئیں گے۔ان کا کہنا تھا کہ مجھے پتا ہے اس سب کے پیچھے کون ہے، یہ سب آئی ایس آئی جنرل عاصم منیر کے کہنے پر کر رہی ہے میں عاصم منیر کا پیچھا نہیں چھوڑوں گا، حکومت سے خطرہ ہے حکومتی ڈاکٹروں پر اعتماد نہیں کرسکتے،

عدالت ڈاکٹر عاصم یونس سے معائنہ کروانے کا حکم دے اور عدالت ڈاکٹر عاصم کو طلب کرے ان سے بشری بی بی سے متعلق رائے لیعمران خان کے مطالبے پر جج ناصر جاوید رانا نے کل بارہ بجے ڈاکٹر عاصم یونس سے بشری بی بی کے طبی معائنے کا حکم دے دیا۔

روزانہ مستند اور خصوصی خبریں حاصل کرنے کے لیے ڈیلی سب نیوز "آفیشل واٹس ایپ چینل" کو فالو کریں۔