751

سرکاری الاٹیز نےاحسان کھوکھرایڈووکیٹ کے توسط سے پلاٹوں کی الاٹمنٹ منسوخ

ججز اور سرکاری افسران کو پلاٹوں کی الاٹمنٹ منسوخ کرنے کا فیصلہ سپریم کورٹ میں چیلنج کر دیا گیا ۔
تفصیلات کے مطابق اسلام آباد ہائیکورٹ کے فیصلے کیخلاف سرکاری الاٹیز نے سپریم کورٹ میں اپیل دائر کر دی۔ حافظ احسان کھوکھر ایڈووکیٹ کی جانب سے دائر اپیل میں اسلام آباد ہائیکورٹ کا فیصلہ کالعدم قرار دیتے ہوئے الاٹمنٹ بحال کرنے کی استدعاکی گئی ۔

درخواست میں کہا گیا کہ اسلام آباد ہائیکورٹ نے ازخودنوٹس لیتے ہوئے الاٹمنٹ منسوخ کی، کیس سیکٹر ایف 14اور 15 کی الاٹمنٹ منسوخ کرنے کا نہیں تھا، آئین کے تحت اسلام آباد ہائیکورٹ کو سوموٹو لینے کا اختیار نہیں ہے، اسلام آباد ہائیکورٹ پلاٹوں کی الاٹمنٹ منسوخ نہیں کر سکتی
سپریم کورٹ زمینوں کے حصول کے نقطے پر پہلے ہی اصول وضع کر چکی ہے، اسلام آباد ہائیکورٹ نے عدالت عظمی کے وضع کردہ اصولوں کو مدنظر نہیں رکھا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

رائے کا اظہار کریں