maira zulifiqar murder case 15

مائرہ ذوالفقارقتل کیس میں اہم پیشرفت،ملزم اشتہاری قرار

لاہور ، لاہور کے علاقے ڈیفنس میں قتل کی جانے والی بیلجئن نژاد لڑکی مائرہ ذوالفقار کے کیس میں اہم پیشرفت سامنے آگئی۔تفصیلات کے مطابق سیشن عدالت لاہور نے مقدمے میں ملوث ملزم ذیشان جدون کو اشتہاری قرار دید یا۔ عدالت کی جانب سے ملزمان کو چالان کی کاپیاں فراہم کرتے ہوئے فرد جرم عائد کرنے کی تاریخ بھی مقرر کر دی گئی ہے۔ ظاہر جدون سمیت دیگر گرفتار ملزمان کوفرد جرم کی کارروائی کیلیے سماعت 7 ستمبر کو طلب کر لیا گیا ہے۔اعترافی بیان میں ملزم نے کہا کہ مقتولہ کے ساتھ جھگڑا ہوا اور3 مئی کی صبح کوقتل کیا۔ مقتولہ کے قتل کا علم اس کی دوست کو تھا۔ پولیس کا کہنا ہے کہ ظاہر جدون پہلے بھی ایک قتل کے مقدمہ میں ملوث رہ چکا ہے۔یاد رہے کہ پاکستانی نژاد مائرہ ذوالفقار کو تین مئی 2021 کو لاہور کے پوش علاقے ڈیفنس (فیز فائیو) میں اس گے گھر میں نامعلوم افراد نے قتل کر دیا تھا۔وہ اس گھر میں گذشتہ چند ماہ سے اپنی ایک خاتون دوست کے ہمراہ مقیم تھیں۔ پوسٹ مارٹم رپورٹ کے مطابق انہیں بے دردی سے قتل کیا گیا تھا۔ایف آئی آر کے مطابق مائرہ کو گولی مار کر ہلاک کیا گیا ہے۔ لاہور میں پولیس نے اس قتل کے الزام میں دو نوجوانوں کے خلاف مقدمہ درج کیا تھا۔ اس کیس میں نامزد دو ملزمان ضمانت قبل از گرفتاری پر ہیں۔ایف آئی آر میں مدعی کی جانب سے الزام عائد کیا گیا ہے کہ مائرہ کو دو لڑکوں نے دھمکی دی تھی اور یہ کہ یہ دونوں نوجوان مائرہ سے شادی کے خواہشمند تھے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

رائے کا اظہار کریں