10

ایل پی جی کی قیمتوں میں اضافے کی ہیٹرک مکمل ، بلند ترین سطح پر پہنچ گئی

اسلام آباد/لاہور ، اوگرا نے تین روز میں ایل پی جی کی قیمت میں 15 روپے کا اضافہ کرکے قیمت کو تاریخ کی بلند ترین سطح پر پہنچا دیا۔
ایل پی جی انڈسٹریز ایسوسی کے چیئرمین عرفان کھوکھر کے مطابق اوگرا نوٹیفکیشن کے بغیر ایل پی جی کی قیمت میں تیسری بار اضافہ ہیٹرک مکمل کرلی اور تین روز میں ایل پی جی کی قیمت میں 15 روپے اضافہ کیا ہے، اس اضاف کے بعد ملک بھر میں ایل پی جی کی قیمت تاریخ کی بلند ترین سطح پر پہنچ گئی ہے۔عرفان کھوکھر کے مطابق اوگرا نے جولائی 2021 کیلئے ایل پی جی کی قیمت 160 روپے فی کلو مقرر کی تھی، اور اب تین دن میں ایل پی جی کی قیمتوں میں 3 بار اضافہ کیا گیا ہے، آج ایل پی جی کی قیمتوں میں ایک بار پھر 5 روپے فی کلو کا اضافہ کردیا گیا ہے، جس کے بعد ملک بھرمیں ایل پی جی کی قیمت 175 روپے فی کلو ہوگئی ہے، گھریلو سلینڈر میں 50 روپے اور کمرشل سلینڈر میں 200 روپے اضافہ کیا گیا ہے، جس کے بعد گھریلو سلینڈر 2050 ، کمرشل سلینڈر 7915 روپے پر پہنچ گیا ہے۔ چیئرمین ایل پی جی انڈسٹریز کا کہنا تھا کہ بلاجواز اضافہ کیخلاف ایل پی جی ڈسٹری بیوٹرزایسوسی ایشن پاکستان نے 18 جولائی کو لاہور میں کنونشن طلب کر لیاہے، کنونشن میں 31 جولائی کو ہونے والی ملک گیر ہڑتال، گوجرانوالہ کی طرف لانگ مارچ کے پروگرام کو حتمی شکل دی جائے گی، کنونشن کے اختتام پر ایک بجے پریس کانفرنس اور ملک بھر میں ایل پی جی کی بڑھتی ہوئی قیمتوں اور غیرمعیاری سلینڈروں کے خلاف روڈ مارچ کیا جائے گا۔دوسری طرف ایل پی جی کے صارفین کی مشکلات بڑھنے لگیں، قیمتوں میں اضافے کے بعد گیس ہی نایاب ہو گئی، شہر میں ایل پی جی کی بیشتر دکانیں بند ہو گئیں، شہری بلیک میں مہنگے داموں گیس خریدنے پر مجبور ہیں۔رکشہ ڈرائیور اور لوڈر گاڑیوں کے مالکان بھی شدید پریشان ہیں۔ انہوں نے مطالبہ کیا کہ حکومت دکانداروں کے لیے ایس او پیز بنائے یا صارفین کے لیے متبادل انتظامات کرے۔ایل پی جی انڈسٹریز ایسوسی ایشن کے چیئرمین عرفان کھوکھر نے قیمتوں میں اضافے کو مسترد کرتے ہوئے31 جولائی کو ملک گیر ہڑتال کا اعلان کردیا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں