28

3 انچ قد بڑھانےکیلئے امریکی شہری نے پونے دو کروڑ روپے سے زائد خرچ کردیے

کئی بار لوگوں کو اپنا قد چھوٹا محسوس ہوتا ہے مگر وہ اس بارے میں کچھ کرنے سے قاصر ہوتے ہیں۔

مگر امریکا سے تعلق رکھنے والے ایک شخص کو محسوس ہوا کہ قد میں کچھ انچ کا اضافہ اس کی زندگی کو بہتر بنا سکتا ہے تو اس نے ہزاروں ڈالرز ایک آپریشن پر خرچ کردیے۔40 سال سے زائد عمر کے جان لوڈیل نامی شخص نے 75 ہزار ڈالرز (پونے 2 کروڑ پاکستانی روپے) اپنا قد 3 انچ بڑھانے کے لیے خرچ کیے۔

انہوں نے یہ رقم ادھار لی تھی اور اب وہ اگلے 5 سال تک ہر ماہ 12 سو ڈالرز کی قسط ادا کرکے یہ قرض ادا کریں گے۔جان لوڈیل نے بتایا کہ آخر کیوں انہوں نے تکلیف دہ سرجری کا فیصلہ کیا۔

ان کا کہنا تھا کہ ‘میں نے محسوس کیا تھا کہ لمبے افراد کے لیے زندگی آسان ہوتی ہے، ایسا لگتا ہے کہ دنیا ان کے سامنے جھک گئی ہے’۔اپنا قد بڑھانے کے لیے انہوں نے ٹانگوں کو لمبا کرنے کی سرجری کرائی تھی۔

اس سرجری سے قبل ان کا قد 5 فٹ 8.5 انچ تھا اور سرجری کے لیے ایک آن لائن بینک سے قرضہ حاصل کیا۔انہیں اب اس بات کی فکر نہیں کہ ہر ماہ 12 سو ڈالرز کیسے ادا کریں گے۔

جان لوڈیل نے کہا کہ ‘اگر آپ لمبے ہوں تو لوگ آپ کو مختلف انداز سے دیکھتے ہیں، مجھے بھی اب پہلے سے زیادہ توجہ مل رہی ہے’۔اس طرح کی سرجری پہلے مختلف امراض کے شکار افراد کے لیے کی جاتی تھی مگر اب یہ عام کاسمیٹک سرجری بنتی جارہی ہے۔

اس سرجری میں مریض کی رانوں کی ہڈیوں کو توڑا جاتا ہے اور پھر ایڈجسٹ ایبل دھاتی کیل ان میں نصب کیے جاتے ہیں۔یہ کیل مقناطیسی ریموٹ کنٹرول سے پھیلتے ہیں اور یہ عمل 3 ماہ تک جاری رہتا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

رائے کا اظہار کریں