imran khan 10

کرپٹ لوگ اقتدارمیں آکرقوم کاپیسہ چوری کرتے ہیں،وزیراعظم

اسلام آباد(آئی پی ایس )وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ2013 کے مقابلے موجودہ حکومت نے کم لاگت سے سڑکوں کی تعمیر کی، ایف آئی اے کو سڑکوں کی تعمیرمیں کرپشن کی تحقیقات کا کہا ہے، موٹرویز کی تعمیرمیں جتنا پیسہ چوری ہوا اس کی تحقیقات کررہے ہیں۔تفصیلات کے مطابق اسلام آباد میں جھل جا، بیلہ شاہراہ کی بحالی اور اپ گریڈیشن کے سنگِ بنیاد کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم عمران خان نے کہاکہ کرپٹ لوگ اقتدارمیں آکرقوم کاپیسہ چوری کرتے ہیں، ایف آئی اے کو سڑکوں کی تعمیرمیں کرپشن کی تحقیقات کا کہا ہے، موٹرویزکی تعمیرمیں جتنا پیسہ چوری ہوا اس کی تحقیقات کررہے ہیں۔وزیراعظم نے کہاکہ قوم کومعلوم ہونا چاہیئے کرپشن سے کتنا نقصان ہوتاہے، کرپشن نہ ہوتی توانہی پیسوں سے بلوچستان کوخوشحال بنا سکتے تھے، ہمارا سب سے بڑا مسئلہ کرپشن ہے،کرپشن کا مطلب اقتدارمیں آکرعوام اورٹیکس کاپیسہ چوری کرناہے۔عمران خان نے کہاکہ غریب ممالک میں سب سے زیادہ کرپشن ہے، خوشحال ممالک میں سب سے کم کرپشن ہے، ملک کو ترقی دینی ہے تو سب علاقوں کو دیکھنا ہوگا ، ہماری کوشش ہے پسماندہ علاقوں کواوپر لائیں، بلوچستان کی ترقی سے پاکستان کو فائدہ ہوگا ، پاکستان کی ترقی کیلئے تمام علاقوں پرتوجہ دینی ہوگی۔وزیراعظم عمران خان نے کہاکہ 5 سال الیکشن کا سوچنے والے کبھی بلوچستان کانہیں سوچیں گے، صرف الیکشن کوسوچیں گے توملک کبھی آگے نہیں بڑھ سکتا،ایف آئی اے قوم کے سامنے لائے کس نے زیادہ پیسہ بنایا، ن لیگ دورکے مقابلے میں 4 رویہ سڑک 20 کروڑ سستی بنائی، ن لیگ دور کے مقابلے میں ہم نے سستی سڑکیں بنائیں۔وزیراعظم نے خطاب کرتے ہوئے مزیدکہا کہ اندرون سندھ سب سے زیادہ غربت ہے، سندھ میں حکومت نہ ہونے کے باوجود احساس پروگرام سے مدد کی، احساس پروگرام سے سندھ کو 34 فیصد حصہ دیا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

رائے کا اظہار کریں