imran khan 27

ڈی جی آئی ایس آئی کی تعیناتی میں تکنیکی خامی تھی جو ٹھیک ہو جائے گی ،وزیراعظم

اسلام آباد(آئی پی ایس )وزیراعظم عمران خان کی زیرصدارت پی ٹی آئی پارلیمانی پارٹی کا اجلاس، وزیراعظم نے موجودہ صورتحال پر پارلیمانی پارٹی کو اعتماد میں لیا ۔ عمران خان نے کہا کہ حکومت اور فوج میں کسی قسم کی کوئی غلط فہمی نہیں ہے، عسکری قیادت سے میرے سے زیادہ بہتر تعلقات کسی کے نہیں، ڈی جی آئی ایس آئی کی تعیناتی میں تکنیکی خامی تھی جو ٹھیک ہو جائے گی ۔ وزیراعظم عمران خان کی زیرصدارت پی ٹی آئی پارلیمانی پارٹی کا اجلاس ہوا۔ اجلاس میں وزیراعظم نے موجودہ صورتحال پر پارلیمانی پارٹی کو اعتماد میں لیا۔ وزیراعظم نے اس موقع پر کہا کہ حکومت اور فوج میں کسی قسم کی کوئی غلط فہمی نہیں ہے، عسکری قیادت سے میرے سے زیادہ بہتر تعلقات کسی کے نہیں، ڈی جی آئی ایس آئی کی تعیناتی میں تکنیکی خامی تھی جو ٹھیک ہو جائے گی،بطور وزیراعظم میرے اور آرمی چیف کے تعلقات مثالی ہیں۔ ہماری 3 گھنٹے طویل ملاقات ہوئی، اپنا اپنا نقطہ نظر کا تبادلہ کیا۔ پارلیمانی پارٹی اجلاس میں افغانستان کے معاملے پر بھی گفتگو کی گئی۔ وزیراعظم نے کہا کہ حکومت کی پہلی کوشش ہے کہ افغانستان میں انسانی بحران پیدا نہ ہو، افغانستان کے استحکام ہوگا تو پاکستان میں بھی امن ہوگا، اجلاس میں ہندو ارکان اسمبلی لال چند ملحی نے مذہب کی جبری تبدیلی سے متعلق بل مسترد ہونے کا شکوہ کرتے ہوے کہا کہ مذہب کی جبری تبدیلی کو روکنے کے لیے قانون سازی کی اشد ضرورت ہے، وزیراعظم نے کہا کہ ہماری حکومت نے اقلیتوں کے حقوق کے لیے سب سے زیادہ اقدامات کیے ہیں، مذہب کی جبری تبدیلی کے خلاف بل میں کچھ مسائل ہیں، اقلیتوں کے حقوق کا تحفظ کریں گے، میں خود یہ سارا معاملہ دیکھ رہا ہوں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

رائے کا اظہار کریں