18

وزیراعظم ، آرمی چیف سے ڈنمارک کے وزیر خارجہ کی ملاقات،دوطرفہ تعاون پرگفتگو

اسلام آباد،وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ افغانستان میں انسانی بحران اور معاشی تباہی کو روکنا ضروری ہے۔
تفصیلات کے مطابق وزیراعظم عمران خان سے ڈنمارک کے وزیر خارجہ نے ملاقات کی، ملاقات کے دوران دونوں ممالک کے مابین تعاون کے فروغ پر اظہار اطمینان کیا گیا جبکہ موسمیاتی تبدیلی اور اس کے منفی اثرات کو کم کرنے کے لیے مشترکہ کوششوں کی ضرورت پر تفصیلی تبادلہ خیال کیا گیا۔ڈنمارک کے وزیر خارجہ نے عمران خان کے 10 ارب درختوں کے اقدام کو سراہا، ڈنمارک کے وزیر خارجہ نے افغانستان سے اپنے شہریوں کے انخلا میں پاکستان کی مدد پرشکریہ ادا کیا۔ملاقات کے دوران وزیراعظم کا کہنا تھا کہ پرامن اور مستحکم پاکستان اور خطے کے لیے بہت اہم ہے۔ افغانستان میں انسانی بحران اور معاشی تباہی کو روکنا ضروری ہے، افغانستان میں پائیدار امن و استحکام میں بین الاقوامی برادری کردار ادا کرے۔انہوں نے کہا کہ عالمی برادری کے تعمیری اقدامات سے عدم استحکام اور پناہ گزینوں کے بڑے پیمانے پر ہجرت کو روکنے میں مدد ملے گی۔علاوہ ازیں ڈنمارک کے وزیر خارجہ نے جی ایچ کیو کا دورہ کر کے آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ سے بھی ملاقات کی ۔آئی ایس پی آرکے مطابق ملاقات میں باہمی دلچسپی امور، خطے کی سیکیورٹی صورتحال پر بات چیت کی گئی۔افغانستان کی حالیہ صورتحال، انسانی بنیادوں پر امداد کے اقدامات میں تعاون و اشتراک پر بھی بات چیت کی گئی۔ ڈنمارک کے وزیر خارجہ نے افغان صورتحال میں پاکستان کے کردار کو سراہا۔آئی ایس پی آر کے مطابق ڈنمارک کے وزیر خارجہ نے کامیاب انخلا آپریشن، خطے کے استحکام کی پاکستان کی کوششوں کی تعریف کی اور ہر سطح پر پاکستان کے ساتھ تعاون بہتر بنانے کا عزم ظاہر کیا۔ملاقات کے دوران آرمی چیف کا کہنا تھا کہ پاکستان ڈنمارک سے تعلقات کو اہمیت دیتا ہے، یورپی ملک کے ساتھ مختلف شعبوں میں دو طرفہ تعاون کا فروغ چاہتے ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

رائے کا اظہار کریں