CDA 19

اسلام آبادمیں پبلک سیکٹر کو کلئیر امپلانٹ سنٹر قائم کرنے کا فیصلہ

اسلام آباد(آئی پی ایس) کیپیٹل ڈویلپمنٹ اتھارٹی نے وفاقی دارالحکومت میں ملک کا پہلا پبلک سیکٹر کو کلئیر امپلانٹ سنٹر قائم کرنے کا فیصلہ کیا ہے، اس سہولت کو سی ڈی اے کو کلئیر امپلانٹ سینٹر کا نام دیا گیا ہے جو وفاقی دارالحکومت میں قائم کیا جائے گا ۔ سی ڈی اے بورڈ کی جانب سے حالیہ اجلاس کے دوران فیصلہ کیا گیا ہے کہ سی ڈی اے کو کلئیر امپلانٹ سینٹر بہرے پن اور کانوں سے متعلق بیماریوں کے علاج کے لیے ایک خصوصی مرکز ہوگا ، اس کا مقصد وزیر اعظم پاکستان کے ویژن کے تحت ہے شہریوں کو صحت کی بہتر سہولیات فراہم کرنا ہے۔ کیپیٹل ڈویلپمنٹ اتھارٹی 2016 سے اسلام آباد میں واحد پبلک سیکٹر کوکلئیر امپلانٹ پروگرام چلا رہی تھی اور ملک بھر سے مریضوں کو باقاعدہ کوکلیئر امپلانٹ سروس مہیا کر رہی تھی ، لیکن مریضوں کی بڑھتی ہوئی ضروریات اور وسائل کی کمی کے باعث کیپیٹل ڈویلپمنٹ اتھارٹی نے فیصلہ کیا کہ ملک میں قوت سماعت اور قوت گویاء سے محروم افراد کے علاج کے لیے علیحدہ اور خصوصی سہولتکی جائے ، اس سلسلے میں سی ڈی اے بورڈ نے کنسلٹنٹ کی ایک پوسٹ (بی پی ایس 20) ، کوکلیئر امپلانٹ سرجن کی ایک پوسٹ (بی پی ایس 19) جبکہ رجسٹرار (بی پی ایس 18) اور آڈیالوجسٹ کی دو پوسٹیں اور ایک پوسٹ اسپیچ تراپسٹ (بی پی ایس 17) کی منظوری دے دیدی گئی ہے۔ یہاں یہ بات قابل ذکر ہے کہ چیئرمین سی ڈی اے کی ہدایت کے مطابق کیپیٹل ہسپتال میں نئے تعمیر کیے جانے والے بلاک میں 10 بستر پہلے ہی کوکلیئر امپلانٹ مریضوں کے لیے مختص کئے گئے ہیں جبکہ 80 ملین روپے کے فنڈز بھی جدید آلات کی خریداری کے لیے مختص کیے گئے ہیں جبکہ آپریشن تھیٹر کی اپ گریڈیشن بھی کی جارہی ہے۔ مزید برآں سی ڈی اے نے پی اے اے ایس اور احساس تحفظ کی وزارت کے ساتھ ایم او یو پر دستخط کیے ہیں تاکہ غریب لوگوں کے علاج کی کفالت کی جا سکے جو کہ بہرے ہیں یا بعض وجوہات کی وجہ سے سماعت سے محروم ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

رائے کا اظہار کریں