26

غیرقانونی موبائل سمز کی روک تھام، بائیو میٹرک کے ساتھ فیس اسکینگ بھی کرانے کا فیصلہ

اسلام آباد،غیرقانونی موبائل سمز کی روک تھام کیلئے پی ٹی اے کا بڑا فیصلہ ،سم خریدنے کیلئے بائیو میٹرک کے ساتھ فیس اسکینگ بھی کرانا ہوگی ،پی ٹی اے نے نئے سم تصدیقی نظام کے پائلٹ منصوبے پر کام شروع کردیا،سم خریدنے اور فروخت کرنے والے دونوں افراد کی فیس اسکینگ ضروری ہوگی ۔
تفصیلات کے مطابق پاکستان ٹیلی کمیونیکیشن اتھارٹی نے غیر قانونی سمز کے اجرا کے کاروبار میں ملوث ملزمان کے خلاف گھیرا تنگ کر دیا ، غیر قانوی سمز کی روک تھام کیلئے بائیو میٹرک کے ساتھ فیس اسکینگ بھی کرانے کا فیصلہ کر لیا گیا ہے ۔ پی ٹی اے حکام کے مطابق غیر قانونی سمز کے کاروبار میں موبائل کمپنیوں کا سٹاف ملوث ہے، غیر قانونی سمز کے اجرا کیلئے سلیکون تھم امپریشن استعمال کیا جاتا ہے، معصوم لوگوں کے ساتھ فراڈ کر کے غیر قانونی سمز کا اجرا کیا جاتا ہے،غیر قانونی سمز دہشتگردی اور دیگر کاموں کیلئے استعمال ہوتی ہیں۔ پی ٹی اے کی دستاویزات کے مطابق غیر قانونی سمز کے اجرا کیخلاف تین موبائل کمپنیوں کی فرنچائز کو ساڑھے 23 ملین کے جرمانے کیے گئے، تین سالوں میں 5 لاکھ 26 ہزار سے زائد غیرقانونی سمز بلاک کی گئیں، غیر قانونی سمز کے اجرا پر 3 لاکھ 60 ہزار سے زائد شناختی کارڈز بلیک لسٹ کیے گئے، غیرقانونی سمز کے کاروبار میں ملوث 52 موبائل فرنچائز بند کی گئیں،ریٹیلرز کے 2 ہزار 926 اور فرنچائز کے 21 افراد نکالے گئے، فرنچائزوں کے 21 ملازمین معطل، 532 فرنچائز کو وارننگ جاری کی گئی، پی ٹی اے کی طرف سے غیرقانونی سمز کے کاروبار میں ملوث 29 کیس ایف آئی اے کو بھیجے گئے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

رائے کا اظہار کریں